تازہ ترین
بھارتی فوج زیر حراست نوجوانوں کو شہید کررہی عالمی تنظمیں قتل عام روکیں علی گیلانی
  7  جون‬‮  2021     |     سپیشل رپورٹس
قائد تحریک آزادی کشمیرسید علی گیلانی نے مقبوضہ کشمیرمیں قابض بھارتی فوج کی جانب سے زیرحراست ایک اور کشمیری نوجوانوں کوبے رحمی سے شہید کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں پر زوردیا ہے کہ وہ کشمیریوں کے قتل عام کو روکنے کے لئے بھارت کے خلاف اقدامات اٹھائیں،ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں بزرگ کشمیری رہنما نے کہا کہ قابض بھارتی فورسز نے ایک اور گھناونی کارروائی کے دوران جنوبی کشمیر کے ترال ضلع میں ایک کشمیری نوجوان محمد امین ملک کو ٹارچر سیل میں بے رحمی سے قتل کردیا،انہوں نے انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ علاقے میں قابض بھارتی فورسز کے ہاتھوںنہتے کشمیریوں کے قتل کا سخت نوٹس لیں اور بھارت سے ان واقعات کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کا مطالبہ کریں۔ کرونا وائرس کی تباہ کاریوں میں 400 کشمیری بچے اپنے والدین سے محروم ہو گئے ہیں۔ والدین سے محروم ان کشمیری بچوں کو شدید معاشی اور معاشرتی مشکلات کا سامنا ہے۔مقبوضہ جموں و کشمیر ، سماجی بہبود کی سکریٹری شیٹل نندا نے میڈیا کو بتایا کہ400 کشمیری بچے ایسے ہیں جن کے والد یا والدہ یا دونوں کرونا کے باعث جاں بحق ہوگئے ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے بچوں کی مالی مدد کرنے اور انہیں تعلیم کو جاری رکھنے کے قابل بنانے کے لیے ان کی معلومات اکٹھی کی جارہی ہیں۔بھارتی حکومت کی طرف سے شراب کی دکانیں کھولنے کی حوصلہ افزائی کے نتیجے میںجموں میں مساجد کے قریب شراب کی دکانیں کھولی جارہی ہیں۔ شراب کی دکانیں کھولنے کے خلاف شہریوں نے احتجاج کیا ہے ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ شراب کی دکانیں عبادت گاہوں کے نزدیک اور بستیوں میں کھولی جارہی ہیں جس کے انتہائی منفی اثرات مرتب ہوں گے ۔سروال جموں کے لوگوں نے احتجاج کیا اس دوران ضلع مجسٹریٹ جموں اور ایکسائز کمشنر کے خلاف بھی نعرہ بازی کی۔اس موقع پر راجیش والی نامی ایک شہری احتجاجی نے میڈیا کو بتایا کہ یہاں شراب کی دکان مندر اور مسجد کے نزدیک کھولی گئی ہے بلکہ ایک سکول بھی ساتھ ہی واقع ہے ۔

رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔