تازہ ترین
دوستی اور دشمنی کا انتخاب پاکستان کے ہاتھ میں ہے‘ افغان صدر کا بے تُکا بیان
  19  اپریل‬‮  2021     |     پاک دفاع
امریکی وزیر خارجہ انتھونی بلنکن نے امریکی میڈیا کو انٹرویو میں کہا ہے کہ القاعدہ کمزور پڑچکی ہے۔ امریکہ کے خلاف حملوں کا امکان نہیں۔ ہمارے ایجنڈے میں چین سے تعلقات‘ ماحولیاتی‘ تبدیلی، کرونا اور دیگر معاملات شامل ہیں۔ ہم اپنی طاقت اور وسائل اب ان معاملات میں صرف کریں گے۔ افغانستان سے جو مقاصد حاصل کرنا تھے وہ حاصل کرلیے۔ انٹیلی جنس افغانستان کے معاملات اور ممکنہ خطرات پر نظر رکھے گی۔ ادھر افغان صدر اشرف غنی نے افغانستان سے بین الاقوامی افواج کے انخلاء پر بات کرتے ہوئے پاکستان کے بارے میں کہا ہے کہ دوستی اور دشمنی کا انتخاب پاکستان ہی کو کرنا ہوگا۔ اتوار کو صدارتی محل ارگ میں پولیس فورس کے نوجوانوں کی تقریب سے خطاب میں افغان صدر نے پاکستان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ دوستی یا دشمنی دونوں پاکستان کے ہاتھ میں ہیں۔ ان کے الفاظ تھے ’آج پاکستان کے لیے فیصلے کا وقت ہے، اگر ہمارا ملک عدم استحکام کا شکار رہا تو پاکستان بھی ہوگا اور اگر وہ ہمارے ملک کی بہتری چاہتے ہیں، تو اس میں ان کی بھی بہتری ہوگی۔ دوستی اور دشمنی کا انتخاب پاکستان کے ہاتھ میں ہے۔ افغان صدر کا کہنا تھا کہ اگر پاکستان افغانستان سے دوستی چاہتا ہے تو افغانستان خطے اور دنیا کے ممالک کے مابین تعاون بڑھانے میں پاکستان کے ساتھ تعاون کرنے کو تیار ہے۔ دو سال سے ان کا ملک ہر طرح سے تیار ہے اور بین الاقوامی افواج کے انخلا سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔
 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں

رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔