تازہ ترین
افغاستان : 3 سابق سینیٹرز کو رشوت کے الزام میں 10 سال قید 40 ہزار ڈالر جرمانہ
  8  فروری‬‮  2021     |     بین الاقوامی دفاع
افغانستان میں بدعنوانی کے سنگین جرائم کا مقابلہ کرنے کے لئے انصاف اور جوڈیشل سینٹر کی بنیادی عدالت نے بلخ میں رشوت لینے کے الزام میں سینیٹ کے 3 سابق ممبروں کو 10 سال قید کی سزا سنائی۔ افغان ذرائع ابلاغ کے مطابق افغان اٹارنی جنرل کے دفتر نے اپنے ایک بیان میں بتایا کہ 3 سابق اراکین سینٹ کو گزشتہ سال افغان سیکورٹی ایجنسی این ڈی ایس نے حراست میں لیا تھا اور اس وجہ سے صدر اشرف غنی نے انہیں پارلیمنٹ سے بے دخل کردیا تھا۔تینوں سابق اراکین سینٹ لیاقت اللہ بابکرخیل ، محمد انور بشلیق اور عظیم قیوش پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ ایک وفد کی صورت میں حیرتان بندرگاہ سمیت بلخ کے محصولات پیدا کرنے والے محکموں کی تحقیقات کرنے گئے تھے جہاں انہوں نے 60ہزار ڈالر رشوت کا مطالبہ کیا تھا ۔انہوں نے مزید بتایا کہ بدعنوانی کے سنگین جرائم کا مقابلہ کرنے کے لئے جوڈیشل سینٹر کے فرسٹ انسٹنس کورٹ نے سینیٹ کے تینوں ممبروں کو 10 سال قید اور40ہزار ڈالر جرمانے کی سزا سنائی ہے جبکہ مدعا علیہان کو سزا کے خلاف اپیل کرنے کا حق بھی حاصل ہے۔
 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں

رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔