تازہ ترین
جوہری ہتھیاروں کیخلاف عالمی معاہدہ وسطی امریکی ملک ہنڈور اس نے بھی دستخط کر دئیے
  28  اکتوبر‬‮  2020     |     بین الاقوامی دفاع
اقوام متحدہ کے اس معاہدے پر پچاس ممالک دستخط کر چکے ہیں میڈیارپورٹس کے مطابق ہنڈوراس اس معاہدے پر دستخط کرنے والا پچاسواں ملک تھا۔ اس وسطی امریکی ملک نے جوہری ہتھیاروں کی ممانعت سے متعلق اقوام متحدہ کے اس معاہدے کی نہ صرف توثیق کی ہے بلکہ اس نے یہ بیڑا بھی اٹھایا ہے کہ کوئی دوسرا دستخط کنندہ ملک کسی بھی حالت میں جوہری ہتھیاروں کی تیاری، خریداری، قبضہ یا ذخیرہ نہ کرے۔ ہنڈوراس کی حکومت کے دستخط کے ساتھ ہی ایک سنگ میل عبور کر لیا گیا ہے۔ اب یہ معاہدہ آئندہ برس بائیس جنوری سے نافذ العمل ہو جائے گا۔اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیو گوٹیرش نے کہا کہ یہ دستاویز جوہری ہتھیاروں کے مکمل خاتمے کے لیے ایک اہم عزم کی نمائندگی کرتی ہے۔ انہوں نے ان تنظیموں کا بھی شکریہ ادا کیا ، جنہوں نے اس مسئلے کو مسلسل اجاگر کیا ۔ جوہری ہتھیاروں کی تخفیف کی مہم آئی کین (آئی سی اے این)نامی اتحاد نے شروع کی تھی۔ اس اتحاد میں ایسی پانچ سو تنظیمیں اور ادارے شامل ہیں، جو دنیا بھر میں جوہری ہتھیاروں کے خلاف ہیں۔

رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔