تازہ ترین
سابق سی آئی اے ڈائریکٹر نے ٹرمپ کی قیادت میں امریکہ کے استحکام سے متعلق سوالات اٹھا دیئے
  8  اکتوبر‬‮  2019     |     انٹیلی جینس
سابق سی آئی اے ڈائریکٹر جوہن برینن نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی قیادت میں امریکہ کے استحکام سے متعلق سوالات اٹھا دیئے ہیں اوران پر ملک کے قوانین اور اداروں بگاڑنے کاالزام عائد کیا ہے۔برینن جو سابق صدر اوبامہ کے ماتحت خدمات سرانجام دے چکے ہیں اور ٹرمپ کے سخت ناقدین میں سے ایک رہ چکے ہیں ،نے این بی سی کے میٹ دی پریس پروگرام میں انٹرویو کے دوران خبر دار کیا کہ جمہوری اصول جن کی بنیاد پر یہ ملک قائم کیا گیا ہے ،اس وقت روندے جارہے ہیں۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کس طرح سے سی آئی اے امریکہ کے استحکام کا جائزہ لے سکتی ہے تو برینن کا کہنا تھا کہ ہم اسے انتہائی کرپٹ حکومت کے طورپر دیکھیں گے ،جواس وقت طاقتور فرد کی قیادت میں ہچکولے کھا رہاہے جو صرف اس ملک کے اداروں اور قوانین کو بگاڑنے کے قابل رہاہے۔ انہوں نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ اگر ایک مطلق العنان حاکم کے ہاتھوں میں یہ ملک رہا تو اس جمہوریت کو آپ زیادہ عرصے تک جان نہیں پائیں گے ۔ریپبلکن اراکین پارلیمنٹ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے برینن کا کہنا تھا کہ ملک تہذیب و تمدن کو دیکھتے ہوئے یہاں صرف شاندار سیاسی عدم استحکام ہے جو حکومت اس وقت دے رہی ہے لہذا ہاں میں سمجھتا ہوں کہ استحکام سے متعلق اصل سوال اٹھتا ہے ۔

 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں

رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔