تازہ ترین
حفترکی فوج کی حملہ ناکام بناتے ہوئے مصراتہ میں ترک فوجی اڈے پربمباری
  21  اگست‬‮  2019     |     ائیرفورس
لیبیا کی قومی فوج کے سربراہ جنرل خلیفہ حفترکی براہ راست نگرانی میں مصراتہ شہر میں قائم ترکی کے ایک فوجی اڈے پر فضائی حملہ کیا گیا۔عرب ٹی وی کے مطابق لیبی فوج کے شعبہ اطلاعات کی طرف سے جاری ایک فوٹیج میں دکھایا گیاکہ جنرل خلیفہ حفتر مصراتہ شہر میں ترکی کے ایک فوجی اڈے پر حملے کی نگرانی کررہے ہیں۔ یہ حملہ اس وقت کیا گیا جب فوجی اڈے پر ترکی کی معاونت سے لیبی فوج کے خلاف کارروائی کی تیاری کی جا رہی تھی۔ لیبی فوج نے مصراتہ کے ملٹری کالج اور ترکی کے اڈے کے قیام کے پروگرام اور قومی وفاق حکومت کی تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا۔لیبی فوج کی طرف سے بمباری کا نشانہ بنائے گئے ترک فوجی اڈے میں طیاروں کے گیراج، ہوائی اڈے کا مغربی رن وے، ترکی کے ڈرون طیارے اور ترکی سے لایا گیا اسلحہ اور گولہ بارود شامل ہے۔ مصراتہ میں کامیاب فوجی کارروائی کے بعد تبصرہ کرتے ہوئے جنرل خلیفہ حفتر نے اسے لیبی فوج کی پیشہ وارانہ صلاحیت کا عکاس قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ لیبی فوج ملک میں کہیں بھی موجود غیرملکی فورسز کے اڈوں، لیبیا میں دہشت گردی کی معاونت کرنے والے ممالک کے مراکز اور دہشت گرد ملیشیائوں کو بلا تفریق نشانہ بنائے گی۔


رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔