تازہ ترین
افغانستان میں دھماکے اورجھڑپیں،ضلعی پولیس سربراہ سمیت 11اہلکارہلاک
  8  مئی‬‮  2019     |     شہ سرخیاں
افغانستان میںبم دھماکے اور خونزیز جھڑپوں کے دوران ضلعی پولیس سربراہ ،دومحافظوں اورآٹھ سیکیورٹی اہلکاروں سمیت11 پولیس اہلکار ہلاک اور تین دیگر زخمی ہوگئے جبکہ افغان حکام نے طالبان کے خلاف فوجی آپریشن اور فضائی حملوں میں 23 طالبان شدت پسندوں کو مارنے کا دعویٰ کیا ہے۔ افغان میڈیا نے پولیس حکام کے حوالے سے بتایا کہ منگل کے روز افغان صوبہ لغمان کے ضلع علی نگر کے ضلعی پولیس سربراہ سید عارف سادات اپنے دومحافظوں سمیت اٴْس وقت سڑک کنارے نصب بم کی زدمیں آکر جاں بحق ہوگئے جب وہ مسکین آباد کے علاقہ میں سڑک پر جارہے تھے۔ حکام کے مطابق واقعہ میں تین دیگر محافظ بھی زخمی ہوگئے جنہیں مقامی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ ادھر شمالی مشرقی صوبہ تخار کے اضلاع خواجہ بہاؤ الدین اور داراقد کے مابین واقع علاقہ چارسیخہ میں ایک سرحد ی پوسٹ پر طالبان شدت پسندوں نے شدید حملہ کردیا جس کے نتیجے میں آٹھ پولیس اہلکار مارے گئے۔ صوبائی گورنر کے ترجمان محمدجواد ہجری نے طالبان حملے کی تصدیق کرلی ہے تاہم طالبان نے حملے میں دس پولیس اہلکاروں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ دریں اثناء افغان حکام نے جنوبہ صوبہ ہلمند کے ضلع مرجاہ میں طالبان کے ریڈ یونٹ کے ایک کمانڈر عطاء اللہ کے کمپاؤنڈ پر افغان سپیشل فورسز اور انٹیلی جنس ادارے نے دھاوا بول کر چار طالبان شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔حکام کے مطابق کمپاؤنڈ سے بڑی تعدادمیں اسلحہ اور گولہ بارود قبضہ میں بھی لیا ہے۔افغان حکام نے وسطی صوبہ میدان وردک کے ضلع سید آباد‘ صوبہ غزنی کے ضلع قاراباغ اور صوبہ پکتیا کے ضلع زرمت میں طالبان کے خلاف افغان فضائی حملوں میں 19 طالبان ہلاک ہونے کا دعویٰ کیا ہے جن میں صوبہ میدان وردک میں پانچ‘ صوبہ غزنی میں تین اور صوبہ پکتیا میں گیارہ طالبان شدت شامل ہیں۔

 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں

رابطہ کریں
   
(92) 51 2873311-12
   
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔