تازہ ترین
آرمی چیف سے تبلیغی اجتماع کے عمائدین کی ملاقات
ریئر ایڈمرل زبیر شفیق کو پاک بحریہ کا کمانڈر سنٹرل پنجاب تعینات کردیا گیا ہے، ترجمان پاک بحریہ
سدھو نے سکھوں کی آبادی غلط بتادی
ننگرہار میں داعش کو شکست دے دی ہے، افغان حکام
آقوام متحدہ کے آزاد پینل نے مرسی کی موت کو ’قتل‘ قرار دیدیا
امریکا کاچھوٹا طیارہ ایک گھر پر گر کر تباہ، پائلٹ ہلاک

وزیراعظم پاکستان عمران خان کی جانب سے کرتاپور راہداری کھولنے کے اقدام کے پوری دنیا میں زبردست پذیرائی ملی ہے اقوام متحدہ اور امریکہ نے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ ہفتہ کو امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ راہداری کھولنے پر پاکستان کی قیادت کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راہدری کھولنا 2 ہمسایہ ممالک کے درمیان ایک مثبت پیش رفت ہے‘ اس اقدام سے بھارتی سکھ یاتری مذہبی رسومات کی ادائیگی کیلئے دربار صاحب جا سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کرتار پورا راہداری کھولنا مذہبی آزادی کے فروغ کیلئے اہم اقدام ہے۔ دوسری جانب اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گیٹرس نے کرتار پور راہداری کے افتتاح کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے بین المذاہب ہم آہنگی کو فروغ ملے گا اور دونوں ممالک کے لوگوں کے درمیان اعتماد بڑھے گا۔ کرتارپور راہداری سے ہندوستانی سکھوں کو بغیر کسی ویزا کے اپنے مذہب کے مقدس ترین مقام پر جانے کا موقع ملا ہے۔ یہ راہداری پاکستان میں گوردوارہ دربار صاحب سکھ مذہب کے بانی گرو نانک دیو کی آخری آرام گاہ ہے سے بھارت کے گورداسپور میں واقع ڈیرہ بابا نانک کے مزار سے منسلک ہے۔ ہفتہ کو وزیر اعظم عمران خان نے باضابطہ طور پر پروقار تقریب میں کرتارپور راہداری کا افتتاح کیا ہے۔ اپنے ایک ٹویٹ میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ یہ راہداری جو دو اہم یاتری مقامات کو ملاتی ہے دونوں ہمسایہ ممالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کی راہ ہموار کرے گی۔
اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گیٹرس نے کرتار پور راہداری کے افتتاح کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے بین المذاہب ہم آہنگی کو فروغ ملے گا اور دونوں ممالک کے لوگوں کے درمیان اعتماد بڑھے گا۔ کرتارپور راہداری سے ہندوستانی سکھوں کو بغیر کسی ویزا کے اپنے مذہب کے مقدس ترین مقام پر جانے کا موقع ملا ہے۔ یہ راہداری پاکستان میں گوردوارہ دربار صاحب سکھ مذہب کے بانی گرو نانک دیو کی آخری آرام گاہ ہے سے بھارت کے گورداسپور میں واقع ڈیرہ بابا نانک کے مزار سے منسلک ہے۔ ہفتہ کو وزیر اعظم عمران خان نے باضابطہ طور پر پروقار تقریب میں کرتارپور راہداری کا افتتاح کیا ہے۔ اپنے ایک ٹویٹ میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ یہ راہداری جو دو اہم یاتری مقامات کو ملاتی ہے دونوں ہمسایہ ممالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کی راہ ہموار کرے گی۔
بھارت کی بوکھلاہٹ اور مسلسل قلابازیاں،پاکستان نے مودی حکومت کے دوغلے پن کو بے نقاب کر دیا۔ ذرائع کے مطابق بھارت سرکار کرتارپور پر پاکستان کے اقدامات سے حواس باختہ ہوگیا، سکھ برادری میں پاسپورٹ کے معاملے پر کنفیوژن پھیلانے کی ناکام کوشش،مودی حکومت کے سکھ کمیونٹی کے پاسپورٹ بنانے میں تاخیری حربے شروع کر دیئے۔زائرین کی سہولت کیلئے وزیر اعظم پاکستان نے پاسپورٹ کیلئے ایک سال کی چھوٹ بھی دی،اس رعائت کے تحت زائرین پاکستان آنے کا قانونی انٹری پرمٹ اپنا شناختی کارڈ ڈرائیونگ لائسنس ادھار کارڈ یا پاسپورٹ دکھا کر حاصل کر سکتے ہیں، بھارت نے پاکستان کی طرف سے سکھوں کے لئے دی گئی مراعات کو مسترد کر دیا،سکھوں کے لئے خصوصی مراعات کا اعلان بابا گرونانک کی 550 ویں برسی کے موقع پر تھا،وزیراعظم نے نے 10 دن پہلے فہرستوں کی فراہمی اور پاسپورٹ کی شرط کے خاتمے کا اعلان کیا تھا۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق بھارت نے وزیراعظم کی اعلان کردہ مراعات کو مسترد کر کے سکھوں کے جذبات کو مجروح کیا، اگر بھارت مراعات سے فائدہ نہیں اٹھانا چاہتا تو یہ اس کی مرضی ہے، بھارت قیادت کرتارپور راہداری پر ذہنی الجھاؤ کا شکار ہے۔




        

تازہ ترین خبریں


سائیبر سکیورٹی

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ دفاع ٹائمز محفوظ ہیں۔